زبانیں

چھٹا سبق

اگر آپ نے مسیح کے ساتھ اپنا سفر کو شروع کیا ہے تو بھروسہ کریں کہ وہ آپ کے ساتھ ہے کیونکہ جلد ہی آپ کی حوصلہ شکنی بھی ہو گی۔

جب آپ حوصلہ شکن ہو جاتے ہیں تو یاد رکھیں کہ خُدا ہر چیز سے زیادہ طاقتور ہے بشمول آپ کی کمزوری یقین کریں کہ وہ آپ کی زندگی بدل رہا ہے اور آپ کو نیا بنا رہا ہے۔

جب ہم ناکام ہو جاتے ہیں اور یہ یقین کرنے کے لیے آزمائے جاتے ہیں کیا ہم نااُمید ہوتے ہیں، تو ہم اپنے آپ کو یاد دلاتے ہیں کہ ہم اس لیے نہیں بڑھتے ہیں کہ ہم اچھے ہیں بلکہ اس لیے کہ مسیح ہمارے اندر ہے ۔ اس پر بھروسہ کے ذریعے اور محبت، عزت اور ہماری کوششوں کے ذریعے ہمارے اندر کام کرتا ہے۔ آئیے ہم اُسکی اطاعت کریں۔

کیا مسیح اتنا طاقتور ہے کہ ہمیں ابھی ایک برُے فیصلے سے باز رکھے؟ یقیناً وہ ہےہماری زندگی میں ہر اچھی چیز اسی سے آتی ہے۔ ہمارا اچھا برتاؤ اس کے ذریعے طاقت رکھتا ہے کیونکہ وہ ہمارے یقین، محبت اور کوشش کے ذریعے کام کرتا ہے۔

اور کیا وہ آپ کو برائی سے بچانے کے لیے وفادار ہے؟ کسی شک سے بالاتر ہے ۔

تو ہم اپنے آپ کو اتنے کمزور کیوں محسوس کرتے ہیں؟ کیونکہ وہ ہمیں کمزور محسوس کرنے دیتا ہے تاکہ ہم اُس پر بھروسہ کریں آپکی اپنی کمزوری آپ کو بیوقوف بناتی ہے ۔ آپ خُدا پر بھروسہ کریں کہ وہ آپ کی طاقت ہے۔

کون سی چیز خُداوند پر بھروسہ کرنے سے روکتی ہے؟ جب ہم اچانک شک کرتے ہیں کہ ہمارے پاس تا بعداری کی طاقت نہیں ہے ۔

ہم بھول گئے کہ خُدا کون ہے؟ ہم بھول گئے کہ ہم اس میں کون ہیں ؟ ہم اپنے بھروسے میں ڈگھمگا گئے کہ وہ اتنا طاقتور ہے کہ ہمیں برائی کا انتخاب کرنے سے روکے۔ اورواقعی ہم اپنے دلوں کو اس سے دوسری چیزوں کی طرف بھٹکنے دیتے ہیں۔

وہ آخری غلطی سب سے زیادہ ڈرپوک اور سب سے زیادہ نقصان دہ ہے بُرائی غلطی ہمارے دلوں کو مسیح سے بھٹکنے سے شروع ہوتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہر روز بائبل پڑھنے، دُعا کرنے اور عبادت کرنے کی مستعد عادت پیدا کرنا بہت ضروری ہے۔ کیونکہ ہم آسانی سے مشغول ہوجاتے ہیں اور ہماری یادیں مختصر ہوتی ہیں۔

ہم کبھی نہیں بھول سکتے کہ خُدا ہماری زندگی ہے۔ نجات نظم میں یہ الفاظ استعمال کیے گئے ہیں، خُداوند میری زندگی کو بدل دے اور مجھے نیا بنا د ے ۔یہ تسلیم کرتا ہے کہ مسیح کو جاننے کے بعد ہماری زندگی کبھی ایک جیسی نہیں ہوگی اور اس کی وجہ سو فیصد ہے کہ وہ کون ہے۔

کیا آپ کا کوئی دوست یا خاندانی ممبر ہے جس سے آپ پاگلوں کی طرح پیار کرتے ہیں؟ تم ان سے محبت کیوں کرتے ہو؟ کیا اس کی وجہ یہ ہے کہ آپ اچھے انسان ہیں۔

ایک دفعہ کسی نے ایک آدمی سے پوچھا کہ کیا وہ اپنی بیوی سے پیار کرتا تھا کیونکہ وہ ایک اچھا انسان ہے۔ اس نے آدمی کو الجھن میں ڈال دیا اور وہ تھوڑا سا ناراض ہوا۔ وہ اس سے پیار کرتا تھا کیونکہ وہ بہت اچھی تھی اس کے لیے اس کی محبت کا اس سے کوئی تعلق نہیں تھا کہ آیا وہ اچھا ہے۔ درحقیقت، وہ جانتا تھا کہ وہ اچھا نہیں ہے اور وہ اس سے زیادہ پیار کرتا تھا کیونکہ وہ اس کی نیکی کی کمی کے باوجود اس سے پیار کرتی تھی۔

یسُوع کے لیے ہماری محبت ایسی ہی ہے۔ اس کا اس سے کوئی تعلق نہیں کہ ہم کتنے اچھے ہیں ہم اس سے پیار کرتے ہیں کیونکہ وہ بہت اچھا ہے۔ ہر روز ہمیں اس کی حیرت انگیز خوبیوں کے بارے میں سوچنا چاہیے جب تک کہ ہم اس کے لیے محبت محسوس نہ کر لیں ۔

تین طریقے جو اس کو فروغ دیتے ہیں وہ ہیں بائبل پڑھنا، دُعا کرنا اور عبادت کرنا۔

کیا آپ کو شک ہے کہ وہ یہ کام کرتا ہے؟

خُدا کے وعدوں کو پڑھیں کہ وہ آپ کو کبھی نہیں چھوڑے گا اور نہ ہی آپ کو چھوڑے گا کہ وہ اچھا کام پورا کرے گا جو اس نے تم میں شروع کیا تھا کہ اس نے آپ سے اس وقت محبت کی جب آپ نے اس سے نفرت کی اور اس نے آپ کو اپنا بننے کے لیے منتخب کیا۔ آپ کی بے اعتمادی اور جان بوجھ کر برائی کے علاوہ کوئی چیز الگ نہیں کر سکتی اُس نے تو آپ کو معاف کر دیا اور قبول کر لیا۔

جب آپ کو شک ہے کہ وہ آپ کے ذہن کی تجدید کر رہا ہے تو اپنے آپ کو یاد دلائیں کہ وہ اپنے کلام کے ذریعے ایسا کرتا ہے۔ جب آپ کو شک ہو کہ آپ میں برائی سے انکار کرنے کی طاقت ہے تو اپنے آپ کو یاد دلائیں کہ اس نے آپ کو ماضی میں برائی پر قابو پانے کی طاقت دی ہے۔ جب آپ کو شک ہے کہ آپ اس سے محبت نہیں کر سکتے ہیں تو اپنے آپ کو یاد دلائیں کہ وہ محبت کرنے کے لیے بہت اچھا ہے۔ جب آپ کو شک ہے کہ آپ کچھ بھی اچھا کر سکتے ہیں تو اپنے آپ کو یاد دلائیں کہ آپ کی زندگی میں ہر اچھی چیز اسی کی طرف سے آتی ہے۔

عاجزی، محبت اور مسیح کی عملی فرمانبرداری میں اس یقین کے ساتھ چلیں کہ وہ آپ کو بدل رہا ہے اور آپ کو مسلسل نیا بنا رہا ہے۔

خُدا کی روح ہمارے اندر رہتی ہےوہ پیار سے ہمیں ایسے طریقوں سے بدلتی ہے جس کو ہم شاید ہی محسوس کر سکیں۔ ہم اس کی زندگی اس طرح بانٹتے ہیں جیسے کوئی بچہ اپنی ماں کا خون بانٹتا ہے۔ بچہ اور ماں الگ الگ لوگ رہتے ہیں لیکن ان کی زندگی ایک خوبصورت انداز میں آپس میں گھل مل جاتی ہے۔ اسی طرح روح القدس یسُوع کے خون کے ذریعے ہماری رُوحوں کو زندگی بخشتا ہے۔

اس کی رُوح وہی ہے جو ہم اپنے اندر محسوس کرتے ہیں جب ہم اس کی دُعا اور عبادت کرتے ہیں۔ اس کی روح کا ہمارے اندر رہنے کا احساس روزمرہ کا ایک اہم تجربہ ہے۔ اس کی روح کے ہم میں رہنے کے مستقل احساس کے بغیر ہم کمزور ہیں۔ لیکن اُس کے ساتھ اُس کی روح ہمیں مضبوط بناتی ہے جسے کوئی اور نہیں کر سکتا۔

گہرے طور پر دیکھئے::

رومیوں 12: 1- 21 کو پڑھیں یہ حوالہ ہماری زندگیوں میں اس تبدیلی کو ظاہر کرتا ہے جو اس وقت آتی ہے جب ہم حقیقی ایمان کے ساتھ اپنی زندگی خُدا کے حوالے کر دیتے ہیں۔ یہ اس بات کی ایک جھلک دیتا ہے کہ روحانی تجدیدمیں کیسا لگتا ہے اور کیسا محسوس ہوتا ہے۔ لکھیں اور شیئر کریں کہ خُدا آپ کی کیسے تجدید کر رہا ہے۔ وہ کہاں سب سے زیادہ صحیح کام کر رہا ہے۔ ابھی اس پر غور کریں کہ وہ کس طرح صبر سے آپ کو ترقی اور پختگی کی راہ پر گامزن کر رہا ہے؟ کیا آپ اس بات کا ثبوت دیکھ سکتے ہیں کہ وہ آپ کے ساتھ مہربان رہا ہے؟

فہرست فہرست اگلے